Gulam Rabbani Fida غلام ربانی فدا - غلام ربانی فداؔ

Breaking

Tuesday, March 3, 2020

Gulam Rabbani Fida غلام ربانی فدا

غلام ربانی فداؔ
شخص وعکس

غلام ربانی فداؔ کو شعر و ادب میں اردو ادب سے عموماً اور مذہبی ادب سے خصوصاً دل چسپی اور شغف ہے۔نثر و نظم دونوں اصنافِ ادب میں طبع آزمائی کرتے ہیں ۔اردو کے اُبھرتے ہوئے عمدہ نعت گو شاعر، قلم کاراور نعتیہ ادب کے جواں سال محقق و ناقد میںآپ کا شمار ہوتا ہے ۔آپ کا طرزِ تحریر انتہائی دل نشین ، شگفتہ اور سلیس ہے ،مذہبی ، اصلاحی،سماجی،تعلیمی اورادبی مو ضوعات پر اب تک درجنوں تحقیقی و تنقیدی اور تجزیاتی مضامین و مقالات نہ صرف مقامی اخبارات بلکہ ملکی و بین الاقوامی اخبارات و رسائل اور جرائد میں شائع ہوچکے ہیں ۔یہی نہیں بلکہ موصوف کے کئی اہم مضامین کے دوسری زبانوں میں تراجم بھی ہوئے ہیں ۔ شاعری میں موصوف نے حمد و مناجات و دعا ، نعت گوئی، سلام، اولیاے کرام کی شان میں مناقب نگاری اور مقتدر علماے کرام کے لیے نذرانۂ عقیدت،غزل گوئی،نظم نگاری کو اپنا مطمحِ نظر بنایا۔
غلام ربانی فداؔ کی پیدائش ہیرور (ضلع ہاویری) میں ہوئی۔والدہ ماجدہ فیروزہ بانو شیوپور تعلقہ ہانگل کی متوطن ہیں اور والد جناب نوراحمداکی اپنے علاقے کے مشہورسیاسی لیڈرہیں۔ہیروراورڈانڈیلی(ضلع کاروار) حیدرآباد(دکن)میں تعلیم کے جملہ مراحل طے ہوئے توحافظ قرآن وقارئ کی سند ڈانڈیلی سے حاصل کی اوردرس نظامی،بی اے ،ڈپلومہ ان عربک کی حیدرآبادمیں تعلیم مکمل کی۔ دین وادب کی خدمت سے جڑ گئے ہیں۔اللہ رب العزت نے بہت ہی کم عمری میں بے پناہ شہرت عطاکی۔نثراورنظم میں تحریریں اخبارات ورسائل میں شائع ہوتے رہتے ہیں۔خاص طور حمدونعت کے فروغ کے لئے سراپااضطراب ہیں۔اسی بناپر اگست ۲۰۱۰ ؁ میں آل انڈیاتحریک فکرنعت کی بنا رکھی ۔جس کامقصد مستحق نعت گو شعراکے مجموعہائے کلام شائع کرانا،ادب نعت کے حوالے سے مذاکرے،نعتیہ مشاعرے منعقدکرنا۔خالص حمدونعت کارسالہ جاری کرناہے۔ مرکزی حمدونعت اکیڈمی دہلی کے رکن اور حمدونعت اکیڈمی شاخ ریاست کرناٹک کے ریاستی صدرہیں۔اور ہندوستان کاپہلاحمدونعت کامعیاری ادبی رسالہ جہان نعت کااکٹوبر۲۰۱۰ ؁ء میں ہری ہرسے آغازکیا اورالحمداللہ جہان نعت مسلسل شائع ہورہاہے۔جس کے ذریعے حمدونعت کہنے والے شعراکی فکرسازی کی جارہی ہے۔عالمی سطح حمدونعت کاپہلا ویب ورژن رسالہ دوماہی جہان نعت بھی شائع ہورہاہے۔تمام شمارے انٹرنیٹ پردستیاب ہیں جسے مشہورسائٹ گوگل پرjahan-e-naat کے الفاظ میں Searchکیاجا سکتا ہے۔شاعری کی ابتدائی دورمیں جناب میکش اجمیری سے شرف تلمذحاصل کیا۔ ریاست وبیرون ریاستوں کے مختلف اہم شہروں میں مشاعرے پڑھنے کے مواقع ملے۔ملک وبیرون ملک کے رسائل و اخبارات میں کلام اور مضامین شائع ہوئے۔اشاعت کا یہ سلسلہ۲۰۰۵ سے آج تک جاری ہے۔آل انڈیاتحریک فکرنعت کے یراہتمام اب تک درجن سے زائد کتابیں شائع ہوچکی ہیں۔الحمداللہ میں چودہ کتابوں کا مرتب ومصنف ہوں
تصنیف وتالیف شائع شدہ(بحیثیت مصنف ومرتب؛۔
٭نعتیہ مجموعہائے کلام1) ’گلزارنعت‘‘ ۔2) ’’جلوہ گاہ طیبہ‘‘
٭غزلیات  3)۔’’شہرآرزومیں‘‘ اور غزلیہ دیوان4)۔’’صحرائے سخن‘‘، 
٭سوانح نگاری میں5)۔ ’’سیدمقبول۔۔۔۔۔کہ گم اس میں ہیں آفاق‘‘ ۔6)۔داستان کربلا’’صحرالہولہو‘‘
٭مضامین کےمجموعے 7)۔۔’’قلم آشنا‘‘ ۔8)۔ ’’آداب نعت گوئی‘‘9)۔’علامہ اخترکچھوچھوی فن وشخصیت‘‘
 ٭قرآن اورعصری تحقیقات پرمشتمل10)۔ ’’قرآن اورکائنات‘‘
٭انٹرویوز پر مشتمل کتاب 11)۔’’روبرو جلداول‘‘ مرتب 
مرتب کردہ ’’جیلانی شاہد کے تین مجموعہائے کلام 12)۔’’جہاں محمدوہاں خداہے‘‘(نعتیہ)13)۔خوشبوئے صبا(غزلیات) 14)۔گلہائے رنگ رنگ (مختلف اصناف سخن)
اس کے علاوہ نثرونظم پرمشتمل مذہبی وادبی ۲۲کتابیں اشاعت کے منتظرہیں۔
زیرقلم:
*سیرتِ رحمتِ عالم(منظوم)*القرآن المنظوم(کلام اللہ کا لفظی اردو منظوم ترجمہ)*‘’’‘150جعلی راویان حدیث‘‘ ۔مسکراہٹوں کی چبھن(ناول) برسات کا آنگن (افسانے)کوئی ہے(مناقشہ)
اس کے علاوہ انٹرنٹ پر ادبی سرگرمیاں ۲۰۰۸ء ؁ سے جاری ہیں۔کئی ویب سائٹس کا رکن ہوں اور ان سائٹس پر کلام و مضامین کی اشاعت کا سلسلہ جاری ہے۔
اعزازات
فیضان رضا ایوارڈ۲۰۰۹
حسان بن ثابت ایوارڈ ۲۰۱۰۔
سیکرٹیری الاشرفیہ ایجوکیشنل سوسائٹی 
رابطہ؛
GULAM RABBANI FIDA

gulamrabbanifida@gmail.com

Gulam Rabbani Fida غلام ربانی فدا
Gulam Rabbani Fida غلام ربانی فدا


No comments:

Post a Comment